قومی ٹیم کی ناقص کارکردگی، وزیراعظم احتساب کریں، محسن خان

کراچی(این پی پی) قومی کرکٹ ٹیم کے سابق افتتاحی بلے باز محسن حسن خان نے کہا ہے کہ پی سی بی کے سرپرست اعلیٰ کی حیثیت سےوزیراعظم عمران خان کرکٹ میں احتساب کریں۔ کراچی پریس کلب کے دورے کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کو درست سمت میں چلایا جائے،ون ڈے اور ٹیسٹ ہی اصل کرکٹ ہے جب کہ ٹی ٹوئنٹی کرکٹ کو بطور تفریح لیا جانا چاہیے۔محسن خان نے کہا کہ ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹرمصباح الحق کو ایک ساتھ کئی ذمے داریاں دینا درست نہیں،مصباح کو کوچنگ کا کوئی تجربہ نہیں،وقار یونس کو ایک مرتبہ پھر بولنگ کوچ لگا دیا گیا جبکہ ان کو تین مرتبہ پہلے ذمے داری سے علیحدہ کیا جاچکا،تین سالہ معاہدے کا کوئی جواز نہیں بنتا، اُن کا انتہائی باوثوق اور مایوس لہجے میں کہنا تھا کہ آسٹریلیا کے خلاف ٹی ٹوئنٹی اور پھر ٹیسٹ سیریز میں عبرت ناک شکست کی وجہ گیم پلان نہ ہونا تھا۔ محسن حسن خان نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ سابق کپتان سرفراز کو ٹیسٹ میں قیادت دینا غلط تھا،اب اس کو تینوں فارمیٹس سے الگ کرکے ناانصافی کی گئی،‏وہ باصلاحیت کھلاڑی ہے،سری لنکا کی ٹیم کا دورہ پاکستان اہمیت کا حامل ہے ،بہتر نتائج کے لیے پاکستان کرکٹ ٹیم میں تبدیلیاں ضروری ہیں۔اس کے بغیر بہتر نتائج حاصل نہیں کیے جاسکتے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں