قومی کرکٹرز کا فٹنس ٹیسٹ 6، 7 جنوری کو ہوگا

کراچی (این پی پی) کوئی بھی کھیل ہو، اس کے لیے فٹ ہونا ناگزیر ہے، سری لنکا سے ہوم ٹیسٹ سیریز میں کامیابی کے باوجود ٹیم مینجمنٹ بعض کھلاڑیوں کی فٹنس سے مطمئن نہیں ، انہیں بہتری لانے کی ہدایت کر دی گئی۔ پاکستانی ٹیم نے گذشتہ دنوں سری لنکا سے ٹیسٹ سیریز میں 1-0 سے کامیابی سمیٹیتھی۔اس جیت کے باوجود ٹیم مینجمنٹ بعض کھلاڑیوں کی فٹنس سے مطمئن نہیں اور انہیں بہتری لانے کا کہا گیا ہے،ذرائع نے بتایا کہ سیریز کے اختتام پر مینجمنٹ نے پلیئرز پر واضح کر دیا کہ انہیں اپنی فٹنس مزید بہتر بنانا ہوگی،2020ء پاکستان کے لیے بہت اہمیت کا حامل سال ہے، ٹی 20 ورلڈکپ بھی آسٹریلیا میں ہوگا،اس میں مکمل فٹ ٹیم ہی دیگر حریفوں کا ڈٹ کر مقابلہ کرسکے گی، اس لیے فٹنس پر خاص توجہ دیں،کھلاڑیوں کا فٹنس ٹیسٹ 6 اور7 جنوری کو نیشنل کرکٹ اکیڈمی لاہور میں لیا جائے گا۔اس میں سینٹرل کنٹریکٹ یافتہ پلیئرز کے ساتھ دیگر کو بھی مدعو کیا گیا ہے، یویو ٹیسٹ کے ساتھ ایک کلومیٹر کی دوڑ لگوائی جائے گی،اس کے بعد ٹرینر جم میں مختلف طریقے سے فٹنس جانچیں گے، پاکستان کرکٹ ٹیم کی بنگلادیش سے سیریز جنوری کے اواخر میں شروع ہونی ہے۔جس پر اب تک سیاہ بادل ہی چھائے ہوئے ہیں۔تمام کرکٹرز اب 5 جنوری کو لاہور میں یکجا ہوں گے، جہاں اگلے روز سے فٹنس ٹیسٹ کا آغاز ہونا ہے۔ممکن ہے بعض کرکٹرز اس فٹنس ٹیسٹ میں فیل ہوجائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں