پاکستان میں‌ بین الاقوامی کرکٹ کی بحالی نزدیک

لاہور (این پی پی) وطن عزیز کے کرکٹ میدان 2009 سے سُونے پڑے ہیں کہ اسی سال سری لنکا کی کرکٹ ٹیم پر لاہور میں‌ حملے کے بعد عالمی کرکٹ کے دروازے پاکستان پر بند کردیے گئے تھے۔ پاکستان نے بے شمار ہوم سیریز عرب امارات میں کھیلیں۔ اس بات کو ایک عشرہ ہوچکا ہے لیکن اُس حملے کے بد اثرات آج تک قائم ہیں اور بیرونی ٹیمیں پاکستان آنے میں ہچکچاہٹ کا مظاہرہ کرتی ہیں، تب سے کوئی ٹیسٹ سرزمین پاک پر منعقد نہیں ہوسکا ہے، گو ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی سیریز ہوئیں اور اس کے لیے زمبابوے اور ویسٹ انڈیز جیسی ٹیموں نے پاکستان آنے کی ہامی بھری اور یہاں ان مقابلوں کا کامیاب انعقاد کیا گیا۔ ملک میں انٹرنیشنل کرکٹ نہ ہونے پر شائقین میں خاصی مایوسی پائی جاتی ہے۔ پی ایس ایل 2 کا فائنل اور 3 اور 4 ایڈیشن کے فائنلز سمیت کچھ میچز وطن عزیز میں کامیابی سے ہوچکے ہیں۔ عالمی الیون بھی پاکستان آکر قومی ٹیم سے تین میچوں کی ون ڈے سیریز کھیل چکی ہے۔ اب خوش کُن خبر یہ ہے کہ جلد ہی پاکستان میں ٹیسٹ کرکٹ کے انعقاد کا سلسلہ بھی دوبارہ سے شروع ہوجائے گا، سری لنکا کا سیکیورٹی وفد کراچی اور لاہور میں سیکیورٹی صورت حال کا جائزہ لے کر جاچکا ہے اور اُس نے اس ضمن میں مثبت رپورٹ دی ہے، اس سے سری لنکا کے دورہ پاکستان اور ٹیسٹ سیریز کھیلنے کے امکانات خاصے روشن ہوگئے ہیں۔ اُمید کی جاسکتی ہے کہ ملک میں پھر کھیلوں کے بین الاقوامی مقابلے کامیابی سے منعقد ہوسکیں گے اور دُنیائے کرکٹ کی بڑی بڑی ٹیمیں پاکستان کا دورہ کریں گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں