ناظم آباد میں شہید ہونے والے زیشان کی شادی کے لئے مرحبا ہال بک ہو چکا تھا

ناظم۔آباد عیدگاہ کے قریب مبینہ پولیس مقابلہ

پولیس اہلکار جاں بحق جبکہ دو ڈاکو ہلاک ، ریسکیو

ملزمان موٹر سائیکل چھین رہے تھے

واردات کے دوران پولیس اہلکاروں کو دیکھ کر ملزمان نے فائرنگ کردی

لوٹ مار میں تین ملزمان شامل تھے

مقابلے کے دوران دو ڈکیت ہلاک،اور ایک فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا

پولیس مقابلے میں ایک اہلکار PC زیشان شھید ہوا. شہید اہلکار کا نکاح ہو نا تھا رواں ماں شادی تھی۔خالہ زیشان

شہید اہلکار کی شادی کے لئے مرحبا ہال بک ہو چکا تھا۔خالہ

کراچی کے علاقے ناظم آباد میں عید گاہ گراؤنڈ کے قریب پولیس مقابلے میں دو ڈاکو ہلاک اور ایک پولیس اہلکار شہید ہوگیا۔

ناظم آباد پولیس کے مطابق گشت پر مامور اہلکاروں نے دو موٹر سائیکل پر سوار تین افراد کو رُکنے کا اشارہ کیا لیکن انہوں نے رکے بغیر اہلکاروں پر فائرنگ کردی۔

پولیس حکام نے بتایا کہ فائرنگ کے تبادلے میں دو ملزمان ہلاک ہوگئے جب کہ ایک اہلکار شہید ہوگیا۔

ایس ایس پی سینٹرل عارف اسلم راؤ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ شہید اہلکار ذیشان 2014 میں بھرتی ہوا تھا جو عید گاہ گراونڈ میں ساتھی اہلکار شاہمیر کے ساتھ ڈکیتی کی وارداتوں کی روک تھام کے لیے گشت پر تھا۔

انہوں نے بتایا کہ مقابلے میں مارے گئے ڈاکوؤں کی شناخت عبدالباسط اور حبیب خان کے نام سے ہوئی ہے جن کا تعلق خضدار سے ہے جب کہ ایک ڈاکو فرار ہوگیا ہے جس کی تلاش جاری ہے۔

ایس ایس پی سینٹرل عارف اسلم راؤ نے بتایا کہ کہ ہلاک ہونے والے ڈاکو صبح سویرے عیدگاہ کے علاقے میں لوٹ مار کرتے تھے تاہم ڈاکوؤں کا کرمنل ریکارڈ اکٹھا کیا جارہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں